اسلام، زبدة الفقہ، کتاب ایمان،


حوضِ کوثر
قیامت کے دن ہر نبی کے لئے ایک حوض ہو گا اور ہر نبی کی امت کی الگ الگ پہچان ہو گی، ہمارے نبی صلی اللّٰہ علیہ وسلم کے حوض کا نام کوثر ہے، وہ سب حوضوں سے بڑا ہے آپ کی امت کی پہچان یہ ہے کہ ان کے وضو کے اعضا نہایت روشن ہوں گے۔ آپ کا حوض کوثر ایک ماہ کی مسافت کی درازی میں ہو گا اس کے کنارے زاویہ قائمہ بناتے ہیں اور کناروں پر موتی کے قبے ہیں، اس کی مٹی نہایت خوشبودار مشک کی ہے اس کا پانی دودھ سے زیادہ سفید، شہد سے زیادہ میٹھا، گلاب اور مشک سے زیادہ خوشبودار، سورج سے زیادہ روشن اور برف سے زیادہ ٹھنڈا ہے۔ اس کے پینے کے برتن ستاروں کی مانند چمکدار اور بکثرت ہیں، آنحضورصلی اللّٰہ علیہ وسلم اپنے دستِ مبارک سے جام بھر بھر کر پلائیں گے جو ایک بار پی لے گا پھر میدانِ حشر میں پیاسا نہ ہو گا مرتد و کافر و مشرک حوض کوثر کے پانی سے محروم رہیں گے۔ بعض علمائ کے نزدیک گمراہ فرقے بھی اس نعمت سے محروم رہیں گے۔ حوض کوثر حق ہے البتہ اس کی کیفیات جو بیان ہوئیں خبر احادث سے ثابت ہیں اس لئے مرتبہ ظن میں ہیں
پچھلا صفحہ
اگلا صفحہ