اسلام،  زبدة الفقہ،   کتاب الصلوٰة ،


قیام و قرآت کی سنتیں

٨. پھر پہلی رکعت میں ثنا یعنی سبحانک اللھم آخر تک پڑھنا،
٩. پھر پہلی رکعت میں تعوذ یعنی اعوذباللّٰہ الخ پڑھنا
١٠. پھر ہر رکعت میں الحمد سے پہلی بسم اللّٰہ پڑھنا
١١. فرض نماز کی تیسری اور چوتھی رکعت میں صورة فاتحہ پڑھنا
١٢. ہر رکعت میں الحمد ختم ہونے پر آمین کہنا خواہ امام ہو یا منفرد اور جہری نمازوں میں مقتدی بھی کہے،
١٣. ثنا و تعوذ و بسم اللّٰہ و آمین کو آہستہ کہنا
١٤. جس جس نماز میں جس قدر قرآن پڑھنا سنت ہے اس کے موافق قرآن پڑھنا
١٥. صرف فجر کی نماز میں پہلی رکعت کی قرآت دوسری سے لمبی کرنا

رکوع کی سنتیں

١٦. رکوع میں تین بار سبحان ربی العظیم پڑھنا
١٧. رکوع میں پیٹھ و سرین کو اس طرح ہموار کر دینا کہ پانی کا پیالہ اس کی پیٹھ پر رکھ دیا جائے تو ٹھہرا رہے
١٨. رکوع میں سر اور پیٹھ کو ایک سیدھ میں رکھنا سر کو نہ اونچا رکھے نہ نیچا بلکہ سر اور پیٹھ اور سرین تقریباً ایک سیدھ میں برابر ہوں
١٩. دونوں ہاتھوں کی انگلیوں سے گھٹنوں کو پکڑنا
٢٠. اور انگلیوں کے خوب کھلا رکھنا
٢١. پنڈلیوں کو سیدھا کھڑا رکھنا اور گھٹنوں میں خم نہ دینا
٢٢. دونوں ہاتھوں سے دونوں گھٹنوں پر سہارا دینا
٢٣. بازئوں کو پہلوئوں سے جدا رکھنا ( رکوع کا یہ مسنون طریقہ مردوں کے لئے ہے عورتوں رکوع میں صرف اس قدر جھکیں کہ ہاتھ گھٹنوں تک پہچ جائیں کمر بالکل سیدہی نہ بچھائیں، ہاتھ کی انگلیاں ملی ہوئی ہوں اور گھٹنوں پر ہاتھ صرف رکھ دیں، زور نہ دیں گھٹنوں میں خم رکھئیں اور بازو پہلو سے ملے رہیں)



پچھلا صفحہ
اگلا صفحہ